پاکستان کرکٹ بورڈ نے عمران خان کی ہدایت پر ڈپارٹمنٹ کرکٹ بند کر کے ڈومیسٹک کرکٹ کو چھ ٹیموں تک محدود کر دیا تھا جس کے بعد سینکڑوں فرسٹ کلاس کرکٹرز بیروزگار ہو گئے تھے۔ کھلاڑی اس پریشانی سے نکلے نہیں تھے کہ کورونا وائرس کی وبا نے ان کرکٹرز کے چولے مزید ٹھنڈے کر دیئے۔
بیروزگار فرسٹ کلاس کرکٹرز نے مشکل وقت میں وزیراعظم عمران خان سے اپیل کی ہے کہ وہ ڈپارٹمنٹ کرکٹ کو دوبارہ شروع کریں۔ انڈر-19 ورلڈکپ کھیلنے والے اور پاکستان اے کی نمائدنگی کرنے والے محمد وقاص کا کہنا ہے کہ ڈپارٹمنٹ کرکٹ بند ہونے کے بعد 7-6 مہینے بہت مشکل سے گزرے ہیں۔
فرٹ کلاس کرکٹر نے وزیراعظم سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ایک سال بہت کچھ کر کے دیکھ لیا لیکن ہم کرکٹ کے علاوہ اور کچھ نہیں کر سکتے اس لیے وہ ڈپارٹمنٹ کرکٹ بحال کریں۔
پاکستان کی تینوں فارمیٹ میں نمائندگی کرنے والے وکٹ کیپر بیٹسمین ذوالقرنین حیدر کہتے ہیں کہ کھلاڑی ڈپارٹمنٹ کرکٹ بند ہونے کی وجہ سے بہت زیادہ پریشان ہیں، عمران خان ڈپارٹمنٹ کرکٹ شروع کریں تا کہ کھلاڑی اپنی زندگی آسانی سے گزار سکیں۔
فرسٹ کلاس کرکٹر حارث علی خان نے کہا کہ ڈپارٹمنٹ کرکٹ دوبارہ سے شروع کی جائے تا کہ ہمارے گھر کا چولہا جلتا رہے اور ہمارے بچے بہتر زندگی گزاریں۔

متعلقہ خبریں